Monday, March 2, 2015

Gazal by Mohammed Rashid Riyaz, Gulbarga - Phone 9742776547

Mohammed Rashid Riyaz, Gulbarga
Phone 9742776547

ہوجا تا ہے بے ساختہ جب پیار کسی سے
دل اُس پہ کرے مرنے کا اقرار خوشی سے

خود سے بھی زیادہ جو تجھے ٹوٹ کے چاہے
لازم ہے کہ، ہو عشق کا اظہار اُسی سے

کیا موت ڈرائے گی بھلا ذوقِ یقیں کو
دیوانہ ہے مرنے کو بھی تیار خوشی سے

موجوں میں پھنسی ہے جو میری کشتئی اُمید
انگڑائیاں لینے لگے مجھدار ابھی سے

چُپ رہنے میں ہی خیر ہے اور راحتِ جاں بھی
بے جا نہ کیا کر کبھی تکرار کسی سے

لہراتے ہوئے نرمی سے دریا میں بکھرنا
اے حُسن ذرا سیکھ یہ اطوار ندی سے

کیون خود سے زیادہ کیا اپنوں پہ بھروسہ
پوچھیں گے یہی بات تو اغیار تجھی سے

اس دریائے لذت کا تو ساحل ہی اجل ہے
تو باز بھی آجا ذرا یار بدی سے

اُس بات پہ تجھ کو بھی رونا ہے ایک روز
جو بات اُڑائی تھی سو بار ہنسی سے

اُردو کے لیے اُردو کا اخبار خریدو
مانگا نہ کرو اُردو کا اخبار کسی سے

یہ بے لاگ لگاؤتو ریاض اچھا نہیں ہے

ہو جائے نہ دل آپ کا بیزار سبھی سے

No comments:

Post a Comment