جمعرات، 27 اکتوبر، 2022

ایک خوبصورت نوجوان لڑکی

 ‏نکاح سے کچھ دیر پہلے اسٹیج پر  کھڑے قاضی صاحب نے بلند آواز کہا کہ اگر کسی کو اس نکاح پر اعتراض ھے تو ابھی بتا دے 


آخری قطار میں سے ایک خوبصورت نوجوان لڑکی گود میں بچہ لئیے اسٹیج کے نزدیک آ گئی

اسکو دیکھتے ھی دلہن نے دلہا کو تھپڑ مارنے شروع کر دئیے

دلہن کا باپ بندوق لینے بھاگا

‏دلہن کی ماں اسٹیج پر ھی بے ھوش ھو گئی 

سالیاں دولہے کو کوسنے لگیں اور سالے آستینیں چڑھانے لگے 

قاضی نے لڑکی سے پوچھا " آپ کا کیا مسئلہ ھے"

لڑکی بولی " پیچھے ٹھیک سے آواز نہیں آ رھی تھی اس لئے آگے آ گئی ھوں" 


کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

اقوال سر سید،اقبال اور مولانا آزاد

  اقوال سر سید،اقبال اور مولانا آزاد                                                           Sayings of Sir Syed, Iqbal and Maulana Azad...