ہفتہ، 12 نومبر، 2022

عارف محمد عارفؔ بھدرک،اڈیشا وفا کی راہ چلمن ہٹا ہٹا کے چلو

""""""""""""""""" غغزل""""""""""""12/11/2022


وفا         کی     راہ        چلمن

ہٹا           ہٹا        کے       چلو


لگیں      نہ      ٹھوکریں  پاؤں 

اٹھا            اٹھا       کے   چلو


کہ                 آج   کل   تو  یہ 

نازک         بہت       زمانہ    ہے


اے       میرے    دوستو   دامن

بچا              بچا      کے    چلو



خدا    کرے      نہ چمک   حسن

کی            ضیا      چھن     لے


چلو       تو       اپنی     نگاہیں

بجھا            بجھا     کے   چلو


یوں          خاکساری         میں

پوشیدہ        کامرانی          ہے


ہو      آنکھ    خاک  پہ   سر کو

جھکا           جھکا     کے   چلو


خدا        کرے    نہ    کہ   قاتل

تمہاری       تاک      میں       ہو


کہ دونوں  ہاتھوں  سے  منہ کو

چھپا     چھپا         کے      چلو


تمہارے     گھر    کا   اے عارفؔ 

انہیں              پتہ      نہ    لگے


نشان        پاؤں     کے       اپنے

مٹا              مٹا     کے       چلو


""""""""""""""""""""""""""""""""""""""""""""""""""""" 

عارف محمد عارفؔ 

بھدرک،اڈیشا 

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

اقوال سر سید،اقبال اور مولانا آزاد

  اقوال سر سید،اقبال اور مولانا آزاد                                                           Sayings of Sir Syed, Iqbal and Maulana Azad...